Jadeed Turk Shayeri Se Intikhab (Urdu Tarjama) - Dr. Asuman Belen Ozcan

Sale priceRs.900.00

معاصر ترک شاعری کے تمام ادوار اور تمام رجحانوں میں مشترکہ خصوصیت زبان ہے۔ اس شاعری کی زبان بولی جانے والی زبان تھی، یقینی طورپر مصنوعی زبان نہیں، ترکی زبان تھی۔ ایک اورمشترکہ خصوصیت یہ تھی کہ وہ ”منظومہ“ سے دور ہو چکے تھے۔ ترک شاعری تمام ادوار میں شدید دباؤ کے باوجود معاشرتی خدشات سے کبھی دور نہیں ہوئی۔ ہمارے شعرا نے ہمیشہ اپنی دنیا کے نظریہ کو سامنے رکھا اور اس کا دفاع کیا۔ ناظم حکمت ران کی طرح عارف دامار بھی جدوجہد کے آدمی تھے۔ان کی شاعری میں تشویشِ وطن جھلکتی تھی، اسی طرح جمال صورئیہ کی شاعری میں بھی اس کی عکاسی تھی۔ جدید ترک شاعری مغرب سے تکنیک، موضوع، خیال جیسے عناصر لینے کے باوجود ہمیشہ اپنی دھرتی، اپنے لوگوں، اپنی آب و ہوا سے جُڑی رہی ہے۔ مجھے امید ہے کہ ہماری بہت ہی بھر پور شاعری کی نما ئندہ مثالوں پر مشتمل اس کتاب کو دلچسپی اور خوشی کے ساتھ پڑھا جائے گا۔

آسمان بیلن اوزجان

انقرہ 2023  

 

Title: Jadeed Turk Shayeri Se Intikhab (Urdu Tarjama) - جدید تُرک شاعری سے انتخاب (اردو ترجمہ)

Compiled and Translated by: Dr. Asuman Belen Ozcan - آسمان بیلن اوزجان
Subject: Poetry
ISBN: 9693534867
Language: Urdu
Number of Pages: 133
Year of Publication: 2023